ایاز صادق نے مسلم لیگ ن لاہور کی صدارت سنبھالنے سے معذرت کر لی۔

اس وقت میری توجہ پارٹی کے دوسرے امور اور اپنے حلقے پر زیادہ ہے۔ سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایز صادق نے قیادت کو پیغام پہنچا دیا۔

لاہور ( تیز ترین ) مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما اور سابق اسپکیر قومی اسمبلی ایاز صادق نے (ن) لیگ لاہور کی صدارت سنبھالنے سے معذرت کر لی۔ میڈیا ذرائع کے مطابق سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کی طرف سے پارٹی قیادت کو پیغام دیا گیا ہے کہ وہ مسلم لیگ ن لاہور کے صدر کی حیثیت سے ذمہ داریاں نہیں سنبھال سکتے کیوں کہ اس وقت ان کی توجہ پارٹی کے دوسرے امور اور ان کے اپنے حلقے پر زیادہ ہے۔ ایسی صورت حال میں لاہور کے صدر کی حیثیت سے خدمات سرانجام نہیں دے سکتا۔
اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کی طرف سے لاہور میں منعقد کیے گئےجلسے کی ناکامی کی خبروں کے بعد سے مسلم لیگ (ن) میں اندرونی اختلافات کی خبریں بھی زیر گردش ہیں۔  (ن) لیگ کے سینئر ترین رہنما چوہدری شیر علی نے (ن) لیگ پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ سمیت 6 دیگر لیگی رہنماوں پر الزام عائد کیا کہ یہ رہنما وکٹ کے دونوں جانب کھیل رہے ہیں۔ چوہدری شیر علی کا کہنا ہے کہ رانا ثناء اللہ نے پنجاب میں پارٹی کو تباہ کر دیا ہے۔ پی ڈی ایم لاہور جلسے کے لئے بھی رانا ثناء اللہ کارکنوں کا قافلہ لے کر جانے کی بجائے اپنی ذاتی گاڑی میں تنہا لاہور گئے۔ اس کے ساتھ ساتھ جاوید لطیف کی جانب سے بھی اسی قسم کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ ہماری جماعت میں 4,6 لوگ ایسے ہیں جو وکٹ کے دونوں طرف کھیل رہے ہیں، ہماری پارٹی کی اسٹیبلشمنٹ اب کمزور ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی میں کام کرنے والوں کو شکایت تھی کہ اپوزیشن تحریک میں کچھ لوگ کام نہیں کرتے۔ مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ سعد رفیق کام نہ کرنے والوں کو جانتے تھے اسی لیے انہوں نے ایسی بات کی جس کی تائید میں مریم نواز نے بھی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے جماعت میں احتساب کی بات کی ہے کیوں کہ ہماری جماعت میں 4,6 لوگ ایسے ہیں جو وکٹ کے دونوں طرف کھیل رہے ہیں۔
اس ضمن میں سینئر صحافی و تجزیہ نگار ہارون رشید کہتے ہیں کہ (ن) لیگ کی پارٹی کے لوگ کہہ رہے ہیں کہ جو لوگ دونوں طرف کھیل رہے ہیں ان میں خواجہ آصف، ایاز صادق اور راناثناءاللہ شامل ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.