پنجاب میں90 فیصدکرونا مریضوں کی حالت بہتر ہے،ڈاکٹر یاسمین راشد

لاک ڈاؤن کے تا الحال نتائج اچھے ہیں۔ ایکسپوسنٹر میں گزشتہ 24 گھنٹے میں231 لوگوں کا ٹیسٹ کیا گیا۔ ان میں 30 مشتبہ افراد کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کی گفتگو

لاہور(تیز ترین) وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ پنجاب میں 90 فیصدمریضوں کی حالت بہتر ہے۔ لاک ڈاؤن کے فی الحال نتائج اچھے ہیں۔ ایکسپوسنٹر میں گزشتہ 24 گھنٹے میں231 لوگوں کا ٹیسٹ کیا۔ ان میں 30 مشتبہ افراد کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔ انہوں نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاؤن کے فی الحال نتائج اچھے ہیں۔ اس وقت 1087کیسز تصدیق شدہ ہیں۔ ان میں287 مریض تبلیغی جماعت کے ہیں۔ جبکہ 10ہزار سے زائد تبلیغی جماعت کے لوگ قرنطینہ میں ہیں۔ ان سب کا ٹیسٹ کریں گے۔ جن کے ٹیسٹ مثبت ہوں گے ان کو ہسپتالوں میں منتقل کردیں گے، اور جن افراد میں علامات نہیں ہیں ان کو قرنطینہ میں رکھیں گے۔  پنجاب میں بڑا نمبر لاہور سے ہے، لاہور میں210 مریض ہیں۔

ان میں زیادہ کا تعلق ٹریول ہسٹری ہے۔ ان کو تلاش کرنا آسان ہے۔ لیکن اگر لاہور کی آبادی دیکھیں تو بہت حد تک لاک ڈاؤن نے ہمیں سپورٹ کیا ہے۔ اب ہم نے ایکسپو سنٹر میں قرنطینہ سنٹر بنا یا ہے۔ جس مریض کو شک ہو، وہ وہاں جائے اور ٹیسٹ کروائے۔ ہم نے گزشتہ 24 گھنٹے میں231 لوگوں کا ٹیسٹ کیا۔ ان میں 30 مشتبہ کیسز تھے۔ ان کو قرنطینہ میں رکھاگیا ہے۔ حوصلہ افزاء بات یہ ہے کہ 1087 مریضوں میں سے90 فیصد ایسے ہیں، جن کی حالت بہتر ہے اور ان کو کوئی علامات نہیں ہیں۔ دوسری جانب قومی ادارہ صحت کی ٹیسٹنگ صلاحیت کے غیرمعیاری ہونے سے کورونا وائرس کے مریضوں کے مشکوک نتائج آنے لگ گئے۔ ایک شخص کا ٹیسٹ کیا گیا جو پہلے مثبت آیا لیکن اگلے روز دوبارہ ٹیسٹ کیا گیا تو منفی آگیا ۔ بتایا گیا ہے کہ پمز کے آرتھوپیڈک کے ٹیکنیشن کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تو پورے شعبے کو بند کردیا گیا۔ اور شعبے کے دوسرے لوگوں کے ٹیسٹ بھی کیے گئے، لیکن اگلے ہی روز جب اسی شخص کا دوبارہ ٹیسٹ کیا گیا تو نتائج منفی آگئے۔ خیبرپختونخواہ یونیورسٹی نے بھی ٹیسٹنگ کٹس کو غیرمعیاری قرار دیتے ہوئے واپس کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔ ٹیسٹنگ کٹس کے نتائج مشکوک آ رہے ہیں۔ ان کی رپورٹس مستند نہیں ہیں۔ واضح رہے اس سے قبل وفاقی وزیر فواد چودھری کی جانب سے بھی غیرمعیاری ٹیسٹنگ کٹس کی نشاندہی کی جا چکی ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.