کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیزثابت ہو سکتی ہیں۔ بل گیٹس نے بڑے خطرے سے خبردار کر دیا۔

کرونا ایک قدرتی وباء ہے اور اموات کی شرح بھی نسبتاََ کم ہے۔ البتہ اگلی وبائیں قدرت کے ساتھ حیاتیاتی دہشت گردی کی وجہ سے بھی آسکتی ہیں، جو تباہ کن ہوں گی، بل گٹس

واشنگٹن (تیز ترین) کورونا سے بھی خطرناک وبائیں مستقبل آ سکتی ہیں۔ تفصلات کے مطابق مائیکروسافٹ کے بانی بل گیٹس نے مستقبل کے بڑے خطرے سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کے بعد آنے والی وبائیں زیادہ ہلاکت خیز ہو سکتی ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ کرونا ایک قدرتی وباء ہے اور اموات کی شرح بھی کم ہے البتہ اگلی وبائیں قدرت کے ساتھ حیاتیاتی دہشت گردی کی وجہ سے بھی آسکتی ہیں، جو تباہ کن ہوں گیں۔ انہوں نےمزید کہا کہ ہوسکتا ہے اگلی صدی میں بیماری ہتھیار کے طور پر استعمال کی جاسکے جو کہ تباہ کن ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کو وبائی امراض کیلئے تیاری کرنی ہوگی۔ جیسے جنگ میں محفوظ رہنے کیلئے کی جاتی ہے۔  کرونا وائرس کی ویکسین کی بڑے پیمانے پر تیاری اور دنیا میں تقسیم کرنے کیلئے بل گیٹس اربوں ڈالرز خرچ کرنے کے لئے تیار ہیں۔ یاد رہےکہ بل گیٹس نے 2015 میں بھی ایک عالمی وباء کے متعلق پیش گوئی کرتے ہوئے کہا تھا دنیا اگلی وباء کیلئے تیار نہیں۔  بل گیٹس نے پانچ سال قبل کہا تھا کہ وباء پوری دنیا پھیل سکتی ہے، کیوںکہ تمام ممالک آپس میں جڑے ہوئے ہیں۔ دوسری جانب بل گیٹس  نے  کورونا  وائرس کی ویکسین پر اربوں ڈالر خرچ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس کورونا وائرس کے خلاف تیار کی جانے والی 7 بہترین ویکسینز کے لیے فیکٹریوں کی تعمیر پر اربوں ڈالرز خرچ کریں گے۔ تفصیلات کے مطابق ایک نجی ٹی وی کے شو کے دوران گفتگو کرتے ہوئے بل گیٹس نے کہا تھا کہ ان کا فلاحی ادارہ گیٹس فاؤنڈیشن کورونا وائرس کی وباء کے خلاف لڑنے کے حوالے سے حکومتوں سے زیادہ تیز کام کرسکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارا ادارہ وبائی امراض کے حوالے سے مہارت رکھتا ہے اور ہم نے وبا کے بارے میں سوچ رکھا تھا، اور ہم کچھ امور جیسے ویکسین کی تیاری کے حوالے سے زیادہ تیار ہیں، ہماری سرمایہ کاری تیاری کے عمل کی رفتار کو تیز کرسکتی ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.