وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس جاری۔

حکومت نے یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے لیے 10 ارب روپے جاری کردیئے۔

اسلام آباد (تیز ترین)  وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس جاری ہے۔ جس میں 9 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا جائے گا۔ اجلاس میں کورونا وائرس کی صورتحال پر وزیراعظم کو بریفنگ دی جائے گی۔ جب کہ انرجی کمیٹی کے فیصلوں کی توثیق بھی ایجنڈے میں شامل ہے.  نادرا اور انٹرنیشنل آرگنائزیشن آف مایئگرینٹس میں معاہدوں کی منظوری متوقع ہے۔  پاکستان کے کم ترقی یافتہ علاقوں میں انٹرنیٹ سروس شروع کرنے کی منظوری کا بھی امکان ہے.

ممنوعہ اور غیر ممنوعہ اسلحہ لائسنس کے اجراء کی منظوری بھی کابینہ کے ایجنڈے میں شامل ہے۔ جنرل پاور پرچیزنگ ایجنسی کے سی ای او کی تقرری بھی ایجنڈے کا حصہ ہے۔ متروکہ وقف املاک پر وزیر اعظم کی ٹاسک فورس اپنی سفارشات پیش کرے گی. اجلاس میں کابینہ کو کورونا وائرس کی صورتحال پربریفنگ دی جائے گی۔ اور کچی کینال منصوبے کی تحقیقات نیب کے حوالے کرنے کی منظوری بھی دی جائے گی.  دوسری جانب وزیراعظم کے احکامات کی روشنی میں حکومت نے یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے لیے 10 ارب روپے جاری کردیئے ہیں، تاکہ لاک ڈاﺅن کے دوران لوگوں کو کنٹرول ریٹس پر اشیائے ضروریہ کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکے. ایم ڈی یوٹیلیٹی اسٹورز عمر لودھی کے مطابق یوٹیلیٹی اسٹورز کے لیے 50 ارب مختص کیے گئے ہیں، جبکہ 50 ارب روپے میں سے 10 ارب روپے وزارت خزانہ نے جاری کر دیئے ہیں. ایم ڈی یوٹیلیٹی اسٹورز عمر لودھی کا کہنا ہے کہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر صارفین کی تعداد میں کئی سو گنا اضافہ ہوا ہے۔ جبکہ رواں ماہ کے پہلے چاردن یوٹیلیٹی اسٹورز پر 2 ارب 30 کروڑ کی ریکارڈ سیل ہوئی ہے۔ عمر لودھی کے مطابق کوشش ہے یوٹیلیٹی اسٹورز پر اشیاء خوردونوش کی فراہمی مسلسل رہے عمرلودھی کا کہنا ہے کہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر چینی 67 روپے فی کلو فروحت کی جا رہی ہے.

Facebook Comments

POST A COMMENT.