پاکستان میں مقیم لاکھوں افغان مہاجرین میں ایک بھی شخص کرونا وائرس سے متاثر نہیں ہوا۔

خوش قسمتی سے پاکستان میں رہنے والے افغانوں میں ابھی تک کویڈ 19 کا کوئی رجسٹرڈ کیس نہیں، صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں،تمام لوگ عالمی ادارہ صحت اور حکام کی ہدایات پر عمل کریں۔پاکستان میں تعینات افغان سفیر عاطف مشال

اسلام آباد (تیز ترین ) پاکستان میں افغان سفیر عاطف مشال نے کہا ہے کہ خوش قسمتی سے پاکستان میں رہنے والے افغانوں میں ابھی تک کرونا کا کوئی مریض نہیں ہے۔ ایک بیان میں عاطف مشال نے کہا کہ ہم صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔ تمام لوگ عالمی ادارہ صحت اور حکام کی ہدایات پر عمل کریں۔ افغان سفیر نے کہاکہ حکومت پاکستان اور اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین کے تعاون پر شکر گزار ہیں۔ دوسری جانب منگل کے روز ملک میں کرونا وائرس کے 251 نئے کیس رپورٹ ہوئے۔ جس کے بعد مجموعی تعداد 4 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔ منگل کےدن ملک میں کرونا وائرس کے 3 مریض  جاں بحق بھی ہوگئے۔ جس کے بعد اموات کی کل تعداد 54 ہوگئی۔ مزید بتایا گیا ہے کہ منگل کے دن پنجاب میں 86 ، سندھ میں 54 ، خیبرپختونخوا میں 95 ، بلوچستان 12،  کشمیر 3 اور اسلام آباد میں ایک کرونا کیس رپورٹ ہوا۔ پنجاب میں کرونا وائرس کے مریضوں کی مجموعی تعداد 2004 ہوگئی ہے اور اموات کی تعداد 15 ہے۔  سندھ میں کیسز کی مجموعی تعداد 986 ہوگئی، جب کہ اموات کی تعداد 18 ہے۔ خیبرپختونخواہ میں اب تک 500 کیسز اور 17 اموات ہوئی ہیں۔  بلوچستان میں 204، گلگلت بلتستان میں 211،  اسلام آباد میں 83 اور آزاد کشمیر میں 18 کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس صورتحال میں معاون خصوصی برائے صحت  ڈاکٹر مرزا نے کہا ہے کہ پاکستان  میں  کرونا وائرس سے اموات کی شرح 1.4ہے،  پاکستان میں اب تک 54 افراد انتقال کرچکے ہیں۔ جبکہ کورونا کے تشویشناک 28 مریض ابھی بھی آئی سی یو میں ہیں۔ ملک میں429 افراد مکمل طور پرصحت یاب ہوچکے ہیں۔ مستقبل میں کرونا کی کٹس لاکھوں میں دستیاب ہوں گی۔ جبکہ مستقبل میں لیبارٹریز کی تعداد 32 اور پھر40 تک لے جائیں گے۔ ملک میں اس وقت 18 لیبارٹریز ہیں جو کرونا وائرس کے پی سی آرٹیسٹ کرسکتی ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.