اسپیکر کا چین، سعودی عرب،ترکی، برطانیہ، اٹلی، امریکہ،ایران اور سپین کے سپیکرزکو خطوط ۔

کورونا وائرس کی وجہ سے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور غم کا اظہارکیا گیا۔

اسلام آباد (تیز ترین) سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے چین، امریکہ، برطانیہ، اٹلی اور سپین سمیت دیگر ممالک کی پارلیمنٹس میں اپنے ہم منصبوں سے کورونا وائرس کی وجہ سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ بدھ کواسپیکر نے نیشنل پیپلز کانگریس آف چائنا، سعودی عرب، ترکی، متحدہ عرب امارات، برطانیہ،  اٹلی، امریکہ، ایران اور سپین کی پارلیمنٹس کے سپیکرز کے نام اپنے الگ الگ خطوط کے ذریعے عالمی وباء کورونا کی وجہ سے قیمتی انسانی جانوں کے نقصان پر گہرے دکھ اورغم کا اظہار کرتے ہوئے مشکل کی اس گھڑی میں یک جہتی کا پیغام دیا۔ نیشنل پیپلز کانگریس آف چائنا کے چیئرمین کے نام اپنے خط میں سپیکر نے کہا کہ چین کی حکومت اور عوام نے جس مثالی انداز میں اس وباء کا مقابلہ کیا وہ دنیا کے لئے قابل تقلید ہے۔

سپیکر نے اس امر کا اعادہ کیا کہ چینی حکومت نے مشکل وقت میں جس طرح پاکستانی طلباء کا خیال رکھا ہم ان کے شکر گذار ہیں۔ موجودہ صورت حال میں پاکستانیوں کی صحت کے لئے چین کی طرف سے فراخدلانہ مدد پر بھی مشکور ہیں۔ امریکی ایوان نمائندگان کی سپیکر نینسی پیلوسی کے نام اپنے خط میں انہوں نے کہا کہ اس وقت عالمی سطح پر تعاون کی اشد ضرورت ہے۔ اس ضمن میں ریاستوں پر پابندیوں میں نرمی اور قرضوں کی ادائیگیوں میں ریلیف اہم تعاون ثابت ہو سکتا ہے۔ برطانوی دارالعوام کے سپیکر کے نام پیغام میں انہوں نے کہا کہ امید ہے برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن جلد صحت یاب ہونگے۔ ترک سپیکر کے نام اپنے خط میں انہوں نے کہا پاکستان سماجی فاصلوں کے ذریعے وباء کے پھیلاؤ کو روکنے اور معیشت کے پہیئے کو رواں دواں رکھنے میں توازن پیدا کرنے میں کوشاں ہے۔ ایرانی سپیکر کے نام خط میں ان کی جلد صحتیابی کی دعا کی اور کہا کہ کہ وزیر اعظم عمران خان نے ترقی پذیر ممالک کے قرضوں میں ریلیف دینے کے حوالے سے بات کی ہے، کیونکہ مشکل کی اس گھڑی میں اس ریلیف سے ترقی پذیر ممالک کے لئے مالی گنجائش پیدا ہوگی، اور وہ اپنے لوگوں کی جانیں بچانے اور ریلیف کی سرگرمیاں جاری رکھ سکیں گے۔  سعودی عرب، متحدہ عرب امارات،  ایران،  اٹلی اور اسپین کے سپیکرز کے نام اپنے خطوط میں ان کے شہریوں کی قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیا اور اس عالمی وباء کا مل کر مقابلہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.