پاکستان میں اوربیرون ممالک پھنسے تبلیغی جماعت کے ہزاروں ارکان کی گھروں کو واپسی ممکن بنائی جائے گی. شہر یار آفریدی

پارلیمان حکومتی امور کی نگرانی کی ذمہ داری ادا کررہی ہے، اور کرتی رہے گی۔ ہمیں مسائل کے حل کیلئے کردار ادا کرناہوگا۔ اجلاس سے خطاب

01..

اسلام آباد (تیز ترین) پارلیمانی کمیٹی کی زیلی کمیٹی برائے مسائل تبلیغی جماعت کے چیئرمین  شہریار خان آفریدی نے کہا ہے کہ پاکستان میں اوربیرون ممالک پھنسے تبلیغی جماعت کے ہزاروں ارکان کی گھروں کو واپسی ممکن بنائی جائے گی۔ اس مقصد کے لئے رائیونڈ میں وزارت داخلہ کا سیٹ اپ قائم کرنا ہوگا ۔وہ پارلیمنٹ ہاؤس میں زیلی کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔ اجلاس میں وزارت داخلہ، ایوی ایشن، صحت اور خارجہ کے افسران نے شرکت کی۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمان حکومتی امور کی نگرانی کی ذمہ داری ادا کررہی ہے اور کرتی رہے گی۔ ہمیں مسائل کے حل کیلئے کردار ادا کرناہوگا، اور متاثرین کو ریلیف دینا ہوگا ہے۔ رائیونڈ میں ایک وزارت داخلہ کا سیٹ اپ قائم کرنا ہوگا تاکہ تبلیغی جماعت کے متاثرین کی امداد اور ان کی اپنے ممالک اور گھروں کو واپسی ممکن بنائی جاسکے۔ شہریار خان آفریدی نے کہا کہ 15000 پاکستانی ملک بھر میں پھنسے ہوئے ہیں. جبکہ 1500 غیرملکی ملک میں موجود ہیں۔ تقریباً 1800 پاکستانی مختلف ممالک میں پھنسے ہوئے ہیں۔ ان سب کی اپنے گھروں کو واپسی یقینی بنانے کیلئے تمام متعلقہ اداروں کو کردار ادا کرنا ہوگا۔  شہریار خان آفریدی نے کہا کہ بیرون ممالک میں پھنسے پاکستانی تارکین وطن کی واپسی کیلئے متعلقہ مشنز اور سفارتخانے فعال کردار ادا کریں۔ ایوی ایشن اور دیگر ادارے ان کی وطن واپسی جلد از جلد ممکن بنائیں۔ پارلیمان پاکستانی تارکین وطن کی جلد از جلد وطن واپسی کے عمل کی نگرانی کریگی۔ اس موقع پر شہریار آفریدی نے متعلقہ وزارتوں کے وفاقی سیکرٹریوں کی اجلاس میں عدم شرکت کا نوٹس لیتے ہوئے سپیکر آفس کو متعلقہ سیکرٹری صاحبان کی آئندہ اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ تبلیغی جماعت کے اکابرین نے رائیونڈ سے بزریعہ آڈیو لنک اجلاس میں شرکت کی۔ وزیر مملکت نے کہا کہ کالا شاہ کاکو لاہور سے 400 افغان مہاجرین کی وطن واپسی کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.