عرب امارات میں پھنسے پاکستانیوں کی وطن واپسی کے لیے پروازیں اگلے ہفتے سے شروع ہو جائیں گی۔

قونصل جنرل کی ٹویٹ میں بتایا گیا ہے کہ آج کے روز پاکستانی قیدیوں کو دو خصوصی پروازوں کےذریعے فیصل آباد اور پشاور بھجوایا جا رہا ہے

اسلام آباد ( تیز ترین ) امارات میں پھنسے پاکستانیوں کی وطن واپسی کے لیے پروازیں اگلے ہفتے سے شروع ہو جائیں گیں۔ قونصل جنرل نے بتایا ہے کہ آج پاکستانی قیدیوں کو دو خصوصی پروازوں کے ذریعے فیصل آباد اور پشاور بھجوایا جا رہا ہے۔ دُبئی متحدہ عرب امارات میں اس وقت 30 سے 35 ہزار پاکستانی فوری طور پر وطن واپسی کے منتظر ہیں۔ جن میں کورونا بحران کے باعث بے روزگار ہونے والے اور وزٹ ویزہ پر گئے پاکستانیوں کی بڑی تعداد شامل ہے۔ گزشتہ کئی دنوں سے ناراض پاکستانیوں کی جانب سے حکومت  پاکستان کو ان کی واپسی کے لیے پروازیں شروع نہ کرنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ تاہم امارات میں پھنسے ان پاکستانیوں کی سُنی گئی ہے۔ خلیج ٹائمز کے مطابق دُبئی میں پاکستانی قونصل خانے کی جانب سے ایک ٹویٹ میں یہ اچھی خبر سُنائی گئی ہے کہ اگلے ہفتے سے امارات میں پھنسے پاکستانیوں کے لیے پاکستانی ایئر لائنز اور اماراتی ایئرلائنز کی پروازیں شروع ہونے کا بھرپور امکان ہے۔ اس معاملے میں صرف پاکستانی حکومت کی جانب سے اجازت ملنے کی دیر ہے. ایئر لائنز کی جانب سے تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ قونصل جنرل کی ٹویٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ آج 14 اپریل کو امارتی حکومت کی جانب سے فلائی دُبئی کی دو خصوصی پروازیں پاکستانی شہروں فیصل آباد اور پشاور کے لیے روانہ کی جا رہی ہیں. تاہم ان میں صر ف اماراتی جیلوں میں بند پاکستانی قیدیوں کو ہی واپس بھیجا جائے گا۔ جبکہ امارات میں موجود عام پاکستانی مسافروں کی وطن واپسی کے لیے خصوصی پروازیں اگلے ہفتے سے شروع ہو جائیں گی۔ پاکستانی قونصل جنرل کی جانب سے اُردو اور انگریزی زبان میں کی گئی یہ ٹویٹس نامعلوم وجوہات کی بناء پر ہٹالی گئی ہیں۔  پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے بھی بتایا گیا ہے کہ آ ج کے دن فیصل آباد روانہ ہونے والی پاکستانی قیدی مسافروں کی پروازدُبئی واپسی پر پاکستان میں موجود اماراتی سفارت خانے کے11 عہدے داروں کو بھی واپس لے کر آئے گی۔ قبل ازیں امارات میں واپسی کے منتظر پاکستانیوں کی جانب سے پاکستانی حکومت اور وزیر اعظم عمران خان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ پاکستانیوں کا کہنا تھا کہ متحدہ امارات کی حکومت ان کے مشکل وقت میں بھرپور ساتھ دیتے ہوئے انہیں بہترین کھانا بھی دے رہی ہے۔ انہیں گلہ ہے تو اپنی پاکستانی حکومت سے ہے، جس نے انہیں دیارِ غیر میں بے آسرا اور لاوارث چھوڑ دیا ہے۔ اس وقت امارات میں 25 ہزار کے قریب پاکستانی ایسے ہیں جو فوری وطن واپسی کے منتظر ہیں۔ یہ افراد وزٹ ویزوں پر امارات آئے تھے یا پھر کورونا وائرس کی وبا کے باعث املازمت سے محروم ہو گئے ہیں۔ جس کے بعد مالی تنگی کے شکار ان افراد کے پاس وطن واپسی کے سوائے اور کوئی راستہ نہیں بچا۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.