صوبے لاک ڈاﺅن کے متعلق اپنے فیصلوں میں خودمختار ہیں۔ فردوس عاشق اعوان

وائرس سے بچاﺅ کے اقدامات کے لیے وفاق اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔ معاون خصوصی برائے اطلاعات

اسلام آباد ( تیز ترین ) وزیر اعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ تمام صوبے کرونا سے متعلق اپنے فیصلوں میں خودمختار ہیں۔ 18 ویں ترمیم صوبوں کے آئینی اختیارات کی ضامن ہے. انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت حالات کے مطابق جو بہتر سمجھے وہ فیصلے کرے لاک ڈاﺅن کو کتنا بڑھانا یا کم کرنا ہے اس کے حوالے سے وفاق کی جانب سے کوئی پابندی نہیں ہے۔ معاون خصوصی نے کہا کہ پاکستانی عوام کی حفاظت ہم سب کی اولین ترجیح ہے۔  کورونا سے بچاوَ کے اقدامات کے لیے وفاق اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ تمام اکائیوں کے عوام کے حقوق کا تحفظ یقینی بنانا وزیراعظم کا نصب العین ہے۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس نے ترقی پذیر ممالک کے عوام کی صحت اور معیشت کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک میں کورونا کے سماجی اور معاشی اثرات زیادہ گھمبیر ہو سکتے ہیں۔ بحران سے نمبرد آزما ہونے کے لیے ایک موثر عالمی ردعمل وقت کا اہم تقاضا ہے۔ معاون خصوصی نے کہا کہ اقوام متحدہ جیسے عالمی اداروں کو ریلیف کا لائحہ عمل مرتب کرنے میں قائدانہ کردار ادا کرنا ہو گا۔  کورونا وائرس نے ترقی پذیر ممالک کے عوام کی صحت اور معیشت کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سندھ کے وزیرتعلیم سعید غنی نے  امریکی  صدر ڈونلڈ ٹرمپ  کے نقش قدم پر چلتے ہوئے عالمی ادارہ صحت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری غلطی یہ ہے کہ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی گائیڈ لائنز پر عمل کرتے ہیں۔ سعید غنی نے کہا کہ جب کاروبار شروع ہوگا تو احتیاطی تدابیر کو یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ سندھ نے بہت سارے اقدامات کیے ہیں، جبکہ دیگر صوبوں سندھ کی تقلید کی ہے۔ سندھ کے وزیرتعلیم نے کہا کہ ہمارے اقدامات کے خلاف بیانیہ شروع کر دیا گیا تھا۔ سعید غنی نے یہ بھی کہا کہ قطعی نہیں چاہتے کہ وائرس پھیلے اور حالات کنٹرول سے باہر ہو جائیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.