بھارتی لیفٹیننٹ جنرل کی طرف سے پاکستان پر الزام کے بعد بھارتی سوشل میڈیا صارفین نے لیفٹیننٹ جنرل کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

بھارتی لیفٹیننٹ جنرل نے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں پاکستان کورونا وائرس پھیلا رہا ہے جس سے وادی کو نقصان پہنچ رہا ہے، اس بیان کے بعد پاکستان سمیت بھارتی سوشل میڈیا صارفین نے بھی لیفٹیننٹ جنرل کو تنقید کا نشانہ بنایا

لاہور ( تیز ترین ) چین کے شہر وہان سے شروع ہونے والے کورونا وائرس نے اس وقت پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے جس کےبعد ہر گزرتے دن کے ساتھ اس کی تباہی میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ تاحال  دنیا  بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد 20 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے، جبکہ 1 لاکھ 34 ہزار افراد  شکار ہلاک ہو چکے ہیں۔ اسی دوران مقبوضہ کشمیر میں تعینات بھارتی فوج کے لیفٹیننٹ جنرل بگاوالی سوماشیکھر راجو نے ایک انٹرویو میں پاکستان پر الزام عائد کیا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں پاکستان اپنے شہریوں کوداخل کر رہا ہے جس سے کورونا وائرس پھیل رہا ہے۔ جس سے وادی میں کورونا پھیلنے کے خطرات پیدا ہوگئے ہیں، لیکن جب ان سے پوچھا گیا کہ اس بات کا کیا ثبوت ہے تو ان کا کہنا تھا کہ یہ ہماری انٹیلیجنس رپورٹ ہے۔ ان کے اس بیان کے بعد سوشل میڈیا پر تنقید کا سلسلہ شروع ہو گیا۔  پاکستان سمیت بھارتی سوشل میڈیا صارفین نے بھی اپنے ہی لیفٹیننٹ جنرل کو تنقید کا نشانہ بنایا۔  بھارتی مصنف اور سابق فوجی افسر پروین ساوہنے نے اپنے ہی فوجی جنرل پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ” بھارتی 15 کور کے کمانڈر بغیر کسی ثبوت کے کہتے ہیں کہ پاکستان کورونا متاثرہ افراد کو کشمیر میں داخل کررہا ہے۔ مجھے حیرانگی ہے ایسے شخص کو اتنا بڑا عہدہ کیسے دیا گیا ہے، جو ایسی سوچ رکھتا ہو، بغیر ثبوتوں کے جوان ایسی باتیں لنگر خانے میں کرتے ہیں”۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.