سعودی عرب نے رمضان میں صبح 9 تا شام 5 بجے لوگوں کو باہر نکلنے کی مشروط اجازت دیدی۔

اشیا خوردونوش کی خریداری محلوں کی مارکیٹ سے ممکن ہوگی۔ نرمی کا فائدہ انہیں ہوگا جہاں 24 گھنٹے کرفیو نہیں ہوگا، اپنے حدود سے باہر پکڑے جانے پر جرمانے ہونگے

ریاض ( تیز ترین )  سعودی حکومت نے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے کے دوران کرفیو میں نرمی کرتے ہوئے صبح 9 تا شام 5 بجے کے دوران لوگوں کو باہر نکلنے کی اجازت دے دی۔ حکومت کی جانب سے رمضان کے دوران شہریوں کو اشیا خوردونوش خریدنے کیلئے کرفیو میں نرمی کا اعلان کیا گیا ہے۔ انتظامیہ کے مطابق اشیا خوردونوش صرف اپنے محلے کی دوکانوں سے خریدی جاسکیں گیں، جبکہ اپنے علاقے سے باہر پکڑے جانے پر جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ نرمی کا اطلاق صرف ان علاقوں میں ہوگا جہاں 24 گھنٹوں کا کرفیو نافذ نہیں ہے۔ دارلحکومت ریاض سمیت دیگر 13 شہروں میں تاحال 24 گھنٹے کرفیو نافذ ہے۔ ایسے کارکن جنہیں کرفیو کے دوران ڈیوٹی جاری رکھنا ضروری ہوگی یا وہ سرکاری محکمہ جات میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں، وہ اس پابندی سے مستثنی ہوں گے- قبل ازیں سمارٹ ایپلی کیشن کے ذریعے سامانِ ضروریہ تک رسائی کا طریقہ متعارف کرایا گیا تھا لیکن رمضان المبارک کے لئے مشروط طور پر نرمی کا حکم نامہ جاری کیا گیا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.