کورونا وائرس کا سب سے بدترین وقت ابھی آنا باقی ہے، عالمی ادارہ صحت

جو ممالک وقتی حالات کو دیکھ کر لاک ڈاؤن میں نرمی یا ختم کر رہے ہیں انہیں خیال رکھنا چاہیئے کہ یہ وباء ابھی ختم نہیں ہوئی۔ ڈائریکٹرعالمی ادارہ صحت

جنیوا ( تیز ترین ) چین کے شہر وہان سے شروع ہونے والے کورونا وائرس نے اس وقت دینا کے بہت سارے ممالک کے ساتھ ساتھ  پاکستان کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے، جس کے بعد ہر گزرتے دن کے ساتھ اس کی  تباہی  میں حیران کن اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ ابھی تک دنیا بھر میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 24 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے، جبکہ 1 لاکھ 70 ہزار سے زیادہ افراد فوت ہو چکے ہیں۔ ڈائریکٹر عالمی ادارہ صحت کاا اس بارے میں کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر میں اس سے بدترین وقت آنا باقی ہے۔ ہمیں اس کے لئے تیار رہنا چاہیئے۔ ہم اس با ت کا اندازہ نہیں لگا سکتے کہ کورونا وائرس اب کس ممالک میں مزید  تباہی  پھیلائے گا، مگر ایک بات واضح ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے حالات مزید خرابی کی طرف ضرور جائیں گے۔ انہوں نے خبردار کیا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی یا ختم کرنے سے وباء مزید پھیل سکتی ہے۔ جس کے بعد بھاری نقصانات اٹھانے پڑ سکتے ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.