کینیا میں اغوا کی گئی اطالوی امدادی ورکر ڈیڑھ سال بعد بحفاظت گھر واپس پہنچ گئی

سلویا رومانو کو 2018ء میں اغواء کیا گیا تھا، ترکش خفیہ اداروں نے اطالوی امدادی ورکر کی بازیابی میں مدد کی

روم ( تیز ترین ) کینیا سے اغوا کی گئی اطالوی امدادی ورکرسلویا رومانو ڈیڑھ سال بعد بخیریت گھر پہنچ گئیں۔ سلویا رومانو کو 2018 میں اغواء کیا گیا تھا، ترکی کے خفیہ اداروں نے اطالوی امدادی ورکر سلویا رومانو کی بازیابی میں مدد کی۔
تفصیلات کے مطابق کینیا سے 2018 میں اغواء ہونے والی اطالوی امدادی ورکر سلویا رومانو کو ڈیڑھ سال بعد بازیاب کروا لیا گیا ہے۔ سلویا رومانو بخیریت اپنے گھر پہنچ چکی ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے

مطابق کینیا میں اغوا کی گئی اطالوی امدادی ورکر سلویا رومانوڈیڑھ سال بعد بحفاظت گھر واپس پہنچ گئیں۔ اٹلی کی امدادی ورکر سلویا رومانو کو کینیا میں نومبر 2018 میں مشتبہ الشباب گروپ نے اغواء کیا تھا۔ گزشتہ ہفتے کو صومالیہ کے دارالحکومت موغادیشو میں الشباب گروپ نے انہیں آزاد کیا، جس کے بعد وہ اٹلی کے دارالحکومت روم پہنچیں، جہاں اٹلی کے وزیراعظم اور وزیر خارجہ نے ان کا استقبال کیا۔ اٹلی کے حساس ادارے نے امددای ورکر کی بحفاظت رہائی کو ترکی اور صومالیہ کے تعاون کا سبب قرار دیا ہے۔ امدادی ورکر سلویا رومانو نے دارالحکومت روم کے کیامپینو ایئرپورٹ پہنچنے پر کہا کہ وہ جسمانی اور ذہنی طور پر بالکل ٹھیک ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.