چین نے بھارتی ریاست سکم میں فائیو جی سسٹم لگا دیا

فائیو جی سسٹم سکم کے ان علاقوں میں لگایا گیا ہے جہاں چینی اور بھارتی افواج میں جھڑپیں ہو رہی ہیں۔ سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود

لاہور ( تیز ترین ) سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا ہے کہ چین نے بھارتی ریاست سکم میں فائیو جی سسٹم کھڑا کردیا ہے۔ فائیو جی سسٹم سے بھارت سمیت دنیا حیران ہوگئی ہے۔ فائیو جی سسٹم سکم کے آس پاس ان علاقوں میں کھڑا کیا گیا، جہاں چینی اور انڈین افواج کی جھڑپیں ہورہی ہیں۔
انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں کہا کہ سکم کے آس پاس نیپال، لداخ جہاں چینی اور بھارتی افواج کی جھڑپیں ہورہی ہیں، وہاں چین نے اپنا فائیوجی سسٹم کھڑا کرکے دنیا کو حیران کردیا ہے۔ یہ ففتھ جنریشن سسٹم ٹیلیفونز، انٹرنیٹ نظام ہے۔ اس کا مظاہرہ چند مہینے قبل ووہان میں کیا گیا تھا کہ روبوٹ لوگوں کے ماسک چیک کررہے تھے، اور ٹمپریچر چیک کررہے تھے، چین اس کا عملاً مظاہرہ کرچکا ہے۔
سینئر تجزیہ کار  ڈاکٹر  شاہد مسعود نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ سکم بھارت کی وہ ریاست ہے جو 1975ء میں قائم ہوئی۔ اس سے پہلے یہ بھارتی ریاست نہیں تھی۔ چین کہتا ہے کہ سکم ان کا حصہ ہے، تبت، تائیوان، نیپال بھی چین کے پاس ہے، چین نیپال کو بھی اپنا حصہ مانتا ہے۔ اب سکم میں چین اور بھارت  کے درمیان لڑائی جارہی ہے، یہ ایک چھوٹی سی پٹی ہے۔ اس پٹی کے ساتھ بھارت کی وہ ریاستیں ہیں جہاں علیحدگی کی تحریکیں چل رہی ہیں۔ سکم میں چین اور بھارت کی لڑائی میں پاکستان اور امریکا کا کوئی ہاتھ نہیں ہے۔ یہ ان دونوں ممالک کا آپس کا معاملہ ہے۔ سکم ایسا علاقہ ہے جو بھارت کے دو حصوں کو آپس میں ملاتا ہے۔ اگر چین نے سکم پر قبضہ کرلیا تو وہ ریاستیں جہاں علیحدگی کی تحریکیں چل رہی ہیں، وہ بھی بھارت سے الگ ہوجائیں گی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.