میں کرنل کی بیوی ہوں، رکاوٹ ہٹاو ورنہ نائب صوبیدار کی وردی اتار دوں گی۔ پاک فوج کے افسر کی اہلیہ کی جانب سے موٹروے پر پولیس اہلکار سے بدتمیزی کا واقعہ

پاک فوج کے کرنل کی اہلیہ نے پولیس اہلکار سے نازیبہ رویہ اپنائے رکھا اور دھمکیاں دیتی رہیں۔ آرمی چیف نے آرمی آفیسر کے خلاف کاروائی کا حکم دے دیا۔

ایبٹ آباد ( تیز ترین )  موٹروے پر پاک فوج کے افسر کی اہلیہ کی جانب سے پولیس اہلکار سے بدتمیزی پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے واقعے کا نوٹس لے لیا۔
تفصیلات کے مطابق ہزارہ موٹروے چیک پوائنٹ پر موجود پولیس کے ناکے پر ایک خاتون نے گاڑی روکے جانے پر پولیس اہلکار سے بدتمیزی کی اور نازیبہ رویہ اختیار کئے رکھا۔ پولیس اہلکار نے خاتون کو کہا کہ ساری گاڑیاں رکی ہوئی ہیں اور صوبیدار صاحب آکر اجازت دے سکتے ہیں جس ہر خاتون آپے سے باہر ہوگئیں، اور کہا کہ میں کرنل کی بیوی ہوں یہ عام گاڑی نہیں ہے، رکاوٹ ہٹاؤ ورنہ نائب صوبیدار کی وردی اتار دوں گی ۔ موصوفہ نے صوبیدار کا نام لے کر نازیبہ الفاظ بھی استعمال کئے


اس کے بعد خاتوں نے گاڑی سے نکل کر سڑک پر موجود رکاوٹ ہٹا کر گاڑی خود چلاتے ہوئے نکال لی۔ خاتون مسلسل غلط زبان کا استعمال کرتی رہیں اور اپنے خاوند کا حوالہ دیتے ہوئے دھمکیاں بھی دیتی رہیں۔ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ سکیورٹی اہلکار کہہ رہے ہیں کہ ہم یونیفارم میں ہیں اور بہت لوگ دیکھ رہے ہیں، لیکن خاتون بضد تھیں کہ میں نے تعارف کروادیا اب تمہیں بیریئر ہٹانا ہوگا، سامنے سے ہٹ جائیں ورنہ گاڑیں چڑھادوں گی۔ اہلکار نے خاتوں کو کہا کہ وہ رکاوٹ ہٹا دے گا۔ جس کے بعد خاتون نے خود رکاوٹ زمین پر گرا دی اور گاڑی چلاتے ہوئے چیک پوسٹ سے بآگے لے گئیں۔ ویڈیو سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی اور ٹویٹر پر”کرنل کی بیوی” ٹرینڈ بھی چلنے لگا۔

اب سینئیر صحافی غریدہ فاروقی نے اپنے ٹویٹر پیغام میں بتایا ہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے واقعے کا نوٹس لے لیا ہے اور فوجی افسر کے خلاف تادیبی کارروائی کا حکم بھی دیا گیا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.