کراچی طیارہ حادثہ میں ایک خاتون مسافر بھی معجزانہ طور پر زندہ بچ گئیں

محفوظ رہنے والی تیسری مسافرطاہرہ محمود کو مقامی ہسپتال میں طبی امداد دی جارہی ہے، ترجمان محکمہ صحت

کراچی ( تیز ترین ) کراچی طیارہ حادثہ میں ایک خاتون مسافر بھی معجزانہ طور پر زندہ بچ گئیں ہیں۔
محکمہ صحت کے ترجمان کے مطابق معجزانہ طور پر محفوظ رہنے والی تیسری مسافر طاہرہ محمود کو مقامی ہسپتال میں طبی امداد دی جارہی ہے۔
تفصیلات کے مطابق کراچی میں پی آئی اے کے افسوسناک طیارہ حادثے میں معجزانہ طور پر 3 مسافر زندہ بچ گئے ہیں۔ زندہ بچنے والے مسافروں میں 1 خاتون کا نام طاہرہ محمود بتایا جا رہا ہے۔ مذکورہ خاتون بھی شدید  زخمی  بتائی جا رہی ہیں جن کا علاج جاری ہے۔ علاوہ ازیں بچ جانے والے 2 مسافروں میں ایک بینک آف پنجاب کے صدر ظفر مسعود ہیں جبکہ دوسرے مسافر کا نام زبیر بتایا جا رہا ہے۔ دونوں مسافروں کو زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جا رہی ہے۔ اطلاعات ہیں ہے کہ طیارے میں مسافروں او عملے کے اراکین سمیت کل 98 افراد سوار تھے۔ آخری اطلاعات تک 60 افراد کی لاشیں ملبے سے نکالی جاچکی ہیں۔ طیارے کا بلیک باکس بھی تلاش کر کے تحویل میں لیا جا چکا ہے۔ ابتدائی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حادثہ طیارے کے دونوں انجن فیل ہو جانے کے باعث پیش آیا۔
 لاہور سے اڑان بھرنے کے بعد دوران پرواز طیارہ میں کسی قسم کی تکنیکی خرابی کی اطلاعات نہیں تھیں۔ تاہم جب طیارہ کراچی ائیرپورٹ پر لینڈ کرنے والا تھا، اس وقت طیارے کے لینڈنگ گیئرکام چھوڑ گئے۔ پائلٹ نے  ائیرپورٹ پر ہنگامی لینڈنگ کرنے کی کوشش کی لیکن ناکام رہا۔ کنٹرول ٹاور سے ہدایات ملنے کے بعد پائلٹ طیارے کو دوبارہ فضاء میں لے گیا اور چکر لگانے کے بعد دوبارہ لینڈنگ کے لئے واپس آیا۔
دوبارہ اترنے کی کوشش سے کچھ دیر قبل ہی پائلٹ کا اچانک کنٹرول ٹاور سے رابطہ منقطع ہوا اور پھر حادثے سے ایک منٹ قبل دوبارہ رابطہ قائم ہوا۔ اس رابطے کے ایک منٹ بعد ہی طیارہ ائیرپورٹ کے قریب آبادی میں گر گیا اور مکمل طور پر تباہ ہوا۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.