مالی خسارے کی وجہ سے پی آئی اے ملازمین کی تنخواہوں میں کٹوتی کا فیصلہ

لاک ڈاون کے باعث ہوابازی کی صنعت بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ مالی خسارے پر قابو پانے کے لیے تنخواہوں میں کٹوتی کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ ترجمان پی آئی اے

کراچی ( تیز ترین ) مالی خسارے کی وجہ سے پی آئی اے ملازمین کی تنخواہوں میں کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس حوالے سے بات کرتے ہوئے ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ کورونا اور لاک ڈاون کے باعث ہوابازی کی صنعت شدید متاثر ہوئی ہے، مالی خسارے پر قابو پانے کے لیے تنخواہوں میں کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا ہے کہ ملازمین کی تنخواہوں میں 10 سے 25 فیصد تک کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
ترجمان نے اس کی وجہ بتائی ہے کہ موجودہ صورت حال میں فضائی آپریشن صرف 10 سے 20 فیصد رہ گیا ہے، جس کی وجہ سے قومی ایئرلائن کو شدید مالی خسارے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، اس مالی قلت سے بچنے کے لئے ملازمین کی تنخواہوں میں کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ترجمان کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ جو ملازمین ایک لاکھ سے زائد تنخواہ لیتے ہیں، ان کی تنخواہ میں 10 فیصد کٹوتی کی جائے گی، جبکہ 2 لاکھ سے زیادہ تنخواہ لینے والے افراد کی تنخواہ میں 20 فیصد کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
جبکہ تین لاکھ سے زائد تنخواہ لینے والے پی آئی اے ملازمین کی تنخواہ سے 25 فیصد کٹوتی ہوگی۔
گروپ ایک تا 4 کے ملازمین کی ماہانہ تنخواہوں میں کسی قسم کی کٹوتی نہیں کی گئی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.