سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں اضافے کا امکان ہے.

حالات بہتر ہونے پر منی بجٹ میں تنخواہوں اور پنشنز میں ضافہ متوقع. آئی ایم ایف نے بھی حمایت کردی ہے۔ 

اسلام آباد ( تیز ترین ) سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشنز میں اضافے کا امکان ہے۔ حالات بہتر ہونے پر منی بجٹ میں تنخواہیں اور پنشنز بڑھائی جاسکتی ہیں، آئی ایم ایف نے بھی حمایت کردی ہے۔
تفصیلات کے مطابق سالانہ وفاقی بجٹ میں تنخواہوں اور پنشنز میں اضافہ نہ ہونے پر پریشان سرکاری ملازمین کیلئے اچھی خبر آئی ہے کہ وزارتِ خزانہ نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشنز میں آضافے کا اشارہ دیا ہے۔
نجی ٹی وی چینل نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ وزارتِ خزانہ نے تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ حالات بہتر ہونے پر اضافہ کیا جائے گا۔ وزارتِ خزانہ کا کہنا ہے کہ معاشی حالات بہتر ہونے کی صورت میں تنخواہیں اور پنشن بڑھائی جاسکتی ہے جبکہ آئی ایم ایف نے بھی اسکی حمایت کی ہے۔
آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ حالات بہتر ہوجائیں تو حکومت درآمدات میں پانچ فیصد سرچارج لگا کر پیسے اکٹھے کر سکتی ہے جس سے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کیا جاسکتا ہے یہ اضافہ منی بجٹ میں کیا جائے گا۔
یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ وفاقی حکومت نے  تنخواہوں اور پینشن میں اضافہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، تاہم حکومت نے تنخواہوں اور پنشن میں کسی قسم کی کٹوتی بھی نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ حکومت کی جانب سے اضافہ نہ کئے جانے کے اعلان سے سرکاری ملازمین میں غم و غصہ پایا جاتا ہے۔جب کہ اپویشن نے بھی حکومتی فیصلے کی مخالفت کی تھی اور اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا تھا کہ ایم ایف کے دباؤ پر تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ نہ کرنا ظلم ہے۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ حکومت نے آئی ایم ایف کے کہنے پر تنخواہیں اور پنشن نہیں بڑھائی تھیں البتہ اب اضافے کا عندیہ دیدیا گیا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.