چین سے مذاکرات کے بدلے بھارت اپنے کئی علاقوں سے ہاتھ دھو بیٹھا۔

چین نے پیان گونگ تسو جھیل کے علاقے کا قبضہ چھوڑنے سے صاف انکار کر دیا۔

نئی دہلی ( تیز ترین ) چین سے مذاکرات کےبدلے بھارت اپنے کئی علاقوں سے ہاتھ دھو بیٹھا۔  چین نے پیان گونگ تسو جھیل، تسو جھیل کے علاقے کا قبضہ چھوڑنے سے صاف انکار کر دیا ہے۔ حالیہ جھڑپوں کے بعد چین 8 کلو میٹر بھارتی علاقے کا کنٹرول حاصل کر چکا ہے۔
ذرائع کے مطابق چین کےساتھ لداخ کے علاقے میں ہونے والی جھڑپوں کا معاملہ بھارت کے لئے روح کا زخم بن گیا۔ بھارت کے میڈیا کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ دونوں ممالک تمام معاملات پرامن طریقے سے حل کرنے کے لئے راضی ہوگئے ہیں، تاہم حقیقت یہ ہے کہ چین کے ساتھ ٹکر لینا بھارت کے لئے اس کی تاریخ کی شرمناک ترین شکست بن گیا ہے۔ بھارتی میڈیا جھوٹا دعویٰ کر رہا ہے کہ چین نے بھارت کے جن علاقوں پر قبضہ کیا تھا، وہ ان علاقے سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔ تاہم بتایا گیا ہے حقیقت اس کے برعکس بتائی جا رہی ہے۔چین سے مذاکرات کے بعد بھارت اپنے کئی علاقوں سے ہاتھ دھو بیٹھا ہے۔چین لداخ میں 4 پٹرولنگ پوسٹوں اور پیان گونگ تسو جھیل کے علاقے سے انخلاء پر بات کرنے کیلئے تیار نہیں۔ چین نے یہاں 8 کلو میٹر بھارتی علاقے پر قبضہ کر رکھا ہے۔ اس تمام صورت حال میں بھارت میں آوازیں اٹھنے لگی ہیں کہ چین سے مذاکرات کے نتیجے میں بھارت کا فائدہ نہیں بلکہ نقصان ہوا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.