جج ارشد ملک کی برطرفی کے بعد نوازشریف نے بھی سزا ختم کرانے کے لئے درخواست تیارکرلی۔

سزا سنانے والے جج کی عہدے سے برطرفی کے بعد اس کی طرف سے دئے جانے والی سزا کی کوئی حیثیت نہیں۔ سزا کالعدم قرار دی جائے۔ نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے درخواست تیار کرلی

اسلام آباد ( تیز ترین ) جج ارشد ملک کی برطرفی کے بعد نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے سزا ختم کروانے کے لئے درخواست تیار کرلی ہے۔ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی عہدے سے برطرفی کے بعد سابق وزیراعظم نوازشریف کی ہدایت پر خواجہ حارث نے نواز شریف کےسزا کےخلاف درخواست تیارکرلی ہے۔ درخواست میں وفاق اور احتساب عدالت کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ احتساب عدالت کےجج ارشد ملک کو عہدے سے برطرف کیا گیا ہے۔ نوازشریف کوارشد ملک نے سزا اور جرمانے کا حکم سنایا تھا۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ سزا سنانے والا جج عہدے سے برطرف ہوتو سزا کی کوئی حیثیت نہیں۔ لٰہذا سزا کالعدم قرار دی جائے۔ آئینی طورپرسزا سنانے والا جج عہدے سے برطرف ہو تو سزا کی کوئی حیثیت نہیں۔ اسلام آباد ہائی کورٹ میں نوازشریف کی اپیل بھی زیرسماعت ہے۔ عدالت نواز شریف کی سزا کو کالعدم قرار دے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نوازشریف نے وکالت نامے پر دستخط کرکے خواجہ حارث کے حوالے کر دیا ہے۔ دوسری جانب لاہورہائیکورٹ سے ویڈیواسکینڈل کیس میں برطرف احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے بحالی کیلئے جوڈیشل سروس ٹریبونل سے رجوع کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.