کُل 15 وفاقی معاونین خصوصی اور مشیران میں سے 7 دوہری شہریت کے حامل

زلفی بخاری، شہبازگل، ندیم افضل چن، شہبازگل، معید یوسف، ثانیہ نشتر، تانیہ ادریس، ندیم بابر غیرملکی شہریت کے حامل نکلے۔

اسلام آباد ( تیز ترین ) وزیراعظم کے کُل 15 معاونین خصوصی اور مشیران میں سے 7 دوہری شہریت کے مالک ہیں۔ شہبازگل 11 کروڑ 85 لاکھ اثاثوں کے مالک ہیں، ندیم افضل چن، زلفی بخاری، شہبازگل، معید یوسف دہری شہریت رکھتے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم کے معاونین خصوصی اور مشیران کے اثاثوں کی تفصیلات سامنے آگئی ہیں۔ زلفی بخاری کے پاس پاکستان میں نہیں بیرون ملک لندن میں کروڑوں کے اثاثے موجود ہیں۔ زلفی بخاری مستقل برطانوی شہری ہیں۔ شہبازگل 15کروڑ مالیت کے اثاثوں کے مالک ہیں۔ شہبازگل اور معید یوسف امریکی گرین کارڈ ہولڈرز ہیں۔ ندیم افضل چن کینیڈین شہریت رکھتے ہیں۔ کُل 15 معاونین خصوصی اور مشیران میں 7 دوہری شہریت رکھتے ہیں۔ تانیہ ادریس کینیڈا اور سنگاپور کی شہریت رکھتی ہیں۔ ثانیہ نشتر ایک گاڑی، 5لاکھ سونے کی مالک، ساڑھے چھ لاکھ بینک اکاؤنٹ میں ہیں۔ ندیم بابر امریکی شہریت کے مالک ہیں۔ ان کے پاس امریکہ میں 23 کروڑ سے زائد مالیت کا گھر ہے، مختلف کمپنیوں کے شیئرز ہولڈرز ہیں۔ شہزاد اکبر کے 5 کروڑ کے اثاثے ہیں۔
سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا ہے کہ غیرمنتخب لوگوں کی بڑی تعداد جلد رخصت ہوجائے گی۔ وہی 4 یا 5 مشیران اور معاون خصوصی رہیں گے جن کو وزیر اعظم عمران خان ضروری سمجھتے ہیں۔ انہوں نے نجی ٹی وی کے اپنے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ غیرمنتخب لوگوں کی بڑی تعداد رخصت ہوجائے گی، بس وہی 4 یا 5 مشیران اور معاون خصوصی رہیں گے جن کو عمران خان سمجھتے ہیں کہ رہنا چاہیے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.