صدر مملکت عارف علوی کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست مسترد۔

چیف جسٹس ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے درخواست مسترد کرتے ہوئے شدید برہمی کا اظہار کیا۔ درخواست گزار پر 10 ہزار جرمانہ عائد کر دیا۔

اسلام آباد ( تیز ترین ) صدر مملکت عارف علوی کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے فیصلہ سناتے ہوئے مسترد کر دیا۔ چیف جسٹس ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے درخواست مسترد کرتے ہوئے شدید برہمی کا اظہار کیا اور درخواست گزار پر 10 ہزار روپےجرمانہ عائد کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے صدر مملکت جانب عارف علوی کو نااہل قرار دئے جانے کی درخواست پر فیصلہ سنا دیا ہے۔ سماعت کے بعد اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ کی جانب سے دائر درخواست پر شدید برہمی کا اظہار کیا گیا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ایسی درخواستیں غیر سنجیدہ اور عدالت کے قیمتی وقت کے ضیاع کا باعث بنتی ہیں۔ ایسی درخواستوں کی حوصلہ شکنی کئے جانے کی ضرورت ہے۔ جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست گزار پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے صدر مملکت کے خلاف دائر درخواست مسترد کر دی ہے۔ جب کہ درخواست گزار پر 10 ہزار روپے کا جرمانہ بھی عائد کیا۔
 اسلام آباد ہائیکورٹ نے آج جمعرات کو وزیراعظم کے معاونین خصوصی کی اہلیت کے حوالے سے بھی فیصلہ سنایا ہے۔ عدالت کا کہنا ہے کہ آئین میں کہیں نہیں لکھا ہوا کہ وزیراعظم کے معاونین دہری شہریت کے حامل نہیں ہو سکتے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.