آرمینیا کے خلاف جنگ کے دوران پاکستان کی جانب سے فوج بھیجنے کے الزامات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں۔

ترکی اور پاکستان نے ہمارے حق کی حمایت ضرور کی لیکن اس جنگ میں دونوں ممالک کا کوئی عملی کردار نہیں ہے۔ ملٹری اتاشی آذربائیجان کرنل مہمان نوروز کا بیان

باکو ( تیز ترین ) آذربائیجان کے ملٹری اتاشی کرنل مہمان نوروز کا اہم بیانسامنے آیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ آرمینیا کے خلاف جنگ کے دوران پاکستان کی جانب سے فوج بھیجنے کے الزامات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں۔ ترکی اور پاکستان نے اس جنگ میں ہمارے حق کی حمایت ضرور کی لیکن اس جنگ میں دونوں ممالک کا کوئی عملی کردار نہیں ہے۔
تفصیلات کے مطابق آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان ہر گزرتے دن کے ساتھ مزید شدت اختیار کرنےوالی جنگ میں آذربائیجان نے عرصہ 30 سال سے آرمینیا کے زیر قبضہ اپنے بہت سارے علاقے واپس لے لئے ہیں۔ ۔اس دوران مسلسل مار کھانے والے آرمینیا نے الزام عائد کیا کہ جنگ میں پاکستان اور ترکی آذربائیجان کو عسکری مدد فراہم کر رہے ہیں، تاہم اب آذربائیجان نے اس کی تردید کر دی ہے۔ آذربائیجان نے واضح کیا ہے کہ آرمینا کیخلاف جنگ میں پاکستان اور ترکی نے کوئی عملی کردار ادا نہیں کیا۔ اس حوالے سے آذربائیجان کے ملٹری اتاشی کرنل مہمان نوروز کا کہنا ہے کہ ترکی اور پاکستان آذربائیجان کی بھرپور حمایت کرتے ہیں، تاہم آرمینیا نے پروپیگنڈا کیا کہ 30 ہزار پاکستانی فوجی اور ترک فضائیہ کے اہلکار جنگ میں شامل ہوئے۔ایسے تمام دعوے بے بنیاد ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ اب تک ہونے والی جھڑپوں میں آزربائیجان کو واضح برتری حاصل ہے۔ آذری فوج نگورنو کاراباخ کے کئی علاقوں کو آزاد کروا چکی ہے۔ آزاد کروائے گئے علاقوں میں اسٹریٹیجک نوعیت کے علاقے بھی شامل ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.