لاہور میں آٹے اور چینی کی شدید قلت

آٹے کی قیمت80روپے جبکہ چینی 105روپے فی کلو تک جا پہنچی، سبزیاں غریب کے بس سے باہر ہونے لگیں۔

لاہور( تیز ترین )  لاہور میں آٹے کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے۔ اوپن مارکیٹ میں 20کلو آٹے کا تھیلا 15 سو روپے تک فروخت ہونے لگا۔ چینی بھی فی کلو ایک سو روپے سے 105 روپے فی کلو میں بکنے لگی۔ گندم کی اوپن مارکیٹ میں فی من قیمت 2450 روپے تک پہنچنے کی وجہ سے فلور ملز نے آٹے کی سپلائی روک دی۔ بازار میں 880 روپے والا 20 کلو آٹے کا تھیلا1500 روپے میں فروخت ہو رہا ہے اور فی کلو چینی 70 روپے کے بجائے105 روپے کلو تک مل رہی ہے۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ آٹا کہیں بھی نہیں مل رہا اور اگر ملتا بھی ہے تو بہت زیادہ قیمت مانگی جاتی ہے۔ اسی طرح چینی بھی ناپید ہو چکی ہے جہاں مل رہی ہے وہاں قیمت بہت زیادہ مانگی جا رہی ہے، جب کہ دکانداروں کا کہنا ہے کہ سپلائی بہتر ہوگی تبھی تو ہم لوگوں کو اشیاء مہیا کرسکیں گے۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ ہم تو مجبور ہیں فلور ملز سپلائی نہیں دے رہیں اور چینی کی قیمت بھی زیادہ ہے۔ گندم کی بڑھتی قیمتوں کو جواز بنا کر چکی اونرز ایسوسی ایشن نے بھی چکی کے فی کلو آٹے کی قیمت 80 سے بڑھا کر85 روپے فی کلو مقررکر دی ہے۔
حکومت نے جان بچانے والی قریباََ 100 ادویات کی قیمتوں میں 262 فی صد تک اضافہ کر دیا ہے، جب کہ پیاز، ٹماٹر، آلو، لہسن جیسی عام اور روزمرہ کی استعمال کی سبزیوں کی قیمتوں میں بھی ہوشربا اضافہ ہوا ہے۔
مارکیٹ میں لہسن 700 روپے کلو، پیاز اور آلو 70 روپے کلو اور ٹماٹر 120 روپے فی کلو تک فروخت ہونے لگے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.