خیبرپختونخواہ کی خاتون ایم پی اے نگہت اورکزئی کی خود سوزی کی کوشش

گورنر شاہ فرمان نے میری زمینوں پر پر قبضہ کیا ہوا ہے۔ مجھے کچھ ہوا تو گورنر اور آئی جی ذمہ دار ہونگے۔ نگہت اورکزئی

پشاور( تیز ترین) خیبرپختون خواہ اسمبلی کی خاتون رکن نگہت اورکزئی نے خود کشی کی کوشش کی لیکن بروقت کاروائی کرتے ہوئے پولیس نے بچا لیا۔
ذرائع کے مطابق خیبر پختونخواہ سے پیپلزپارٹی کی خاتون رکن اسمبلی نگہت اورکزئی نے خود سوزی کی کوشش کی جسے پولیس نے ناکام بنا دیا۔ خاتون ایم پی اے نگہت اورکزئی نے آئی جی خیبر پختون خواہ کے دفتر کے باہر پیٹرول چھڑک کر اپنے آپ کو جلانے کی کوشش کی جس پر پولیس اسٹاف نے انہیں روک دیا۔پولیس ذرائع کے مطابق آئی جی آفس کے باہر ایم پی اے نے خود پر پٹرول چھڑکا لیکن پولیس اہلکار انہیں خود سوزی کی کوشش سے باز رکھنے میں کامیاب رہے ہیں۔ میڈیا ذرائع کے مطابق پولیس کی جانب سے خود سوزی سے روکے جانے کے بعد پیپلز پارٹی کی خاتون رکن صوبائی اسمبلی نہگت اورکزئی نے کہا کہ مسئلہ میری زمینوں کا ہے۔ گورنر خیبر پختون خواہ شاہ فرمان اور ان کے لوگ میری زمین پر قابض ہیں۔ انہوں نے نے گورنر خیبرپختون خواہ شاہ فرمان پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ ان کے لوگ میری زمینوں پر قابض ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ شاہ فرمان صوبے میں منشیات فروشوں کی پشت پناہی کرتے ہیں۔ ان کے قبضہ مافیا گروپ نے میری زمینوں پر قبضہ کیا ہوا ہے۔ اور پولیس بھی گورنر کے حکم پر میری بات نہیں سن رہی، جس وجہ سے یہ انتہائی قدم اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے خاتون ایم پی اے کا کہنا تھا کہ مجھے کچھ بھی ہوا تو گورنر شاہ فرمان اور آئی جی اس کے ذمہ دار ہوں گے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.