فرانسیسی صدر نےلاکھوں مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان

گستاخانہ خاکوں کی حوصلہ افزائی سے اسلام اور پیغمبراسلام کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کا فرانسیسی صدر کے اسلام مخالف بیانات پر شدید ردعمل

اسلام آباد ( تیز ترین ) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ فرانس کے صدر نے لاکھوں مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے۔ گستاخانہ خاکوں کی حوصلہ افزائی سے اسلام اور پیغمبراسلام کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ جہالت پر مبنی بیانات، نفرت، اسلاموفوبیا اور انتہاء پسندی کو فروغ دیں گے۔ انہوں نے فرانسیسی صدر کے اسلام مخالف بیانات پر اپنے شدید ردعمل میں کہا کہ لیڈر کی پہچان ہے کہ وہ لوگوں کومتحد کرتا ہے۔ نیلسن منڈیلا نے لوگوں کو تقسیم کرنے کے بجائے متحد کیا۔ فرانسسی صدر انتہا پسندی مسترد کرنے کی بجائے تقسیم بڑھارہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ وقت ہے فرانسیسی صدر میکرون تقسیم کے بجائے انتہاء پسندی روکیں۔ گستاخانہ خاکوں کی حوصلہ افزائی سے اسلام اور پیغمبراسلام کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ اسلام کو سمجھے بغیرنشانہ بنانے نے دنیا بھرکے مسلمانوں کے جذبات مجروح کیے۔ عمران خان نے کہا کہ تقسیم بنیاد پرستی کا سبب بنتی ہے۔ لیکن جہالت پر مبنی بیانات، نفرت، اسلاموفوبیا اور انتہاء پسندی کو فروغ دیں گے۔ اسی طرح گزشتہ روز ترک صدر طیب اردوان نے بھی فرانسیسی صدر کے بیانات پر سخت ردعمل دیا اور کہا کہ دماغی مریض ہے، اسے علاج کی ضرورت ہے۔ مساجد بند کرنے اور مسلمانوں کے خلاف کریک ڈاون پر ترک صدر کی جانب سے فرانس اور یورپ پر شدید تنقید کی گئی ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.