پاکستان مسلم لیگ (ن) نے لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ کے پارٹی چھوڑنے کے بعد کے لئے اہم فیصلہ

نواز لیگ کا بلوچستان میں نئے چہرے لانے کا فیصلہ۔ ایسے افراد لائیں جائیں گے جو بلوچستان کی آواز کو درست معنوں میں بلند کر سکیں گے۔

لاہور ( تیز ترین ) پاکستان مسلم لیگ ن نے فیصلہ کیا ہے کہ صوبہ بلوچستان میں ان کی جماعت کی خالی جگہوں کو پُر کیا جائےگا۔ خصوصی طور پر جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ کی طرف سے سیاسی جماعت چھوڑنے کی وجہ سے جو خلا پیدا ہوا ہے وہ پورا کیا جا سکے۔ جنرل بلوچ نے پی ڈی ایم کے جلسے میں نمایاں کردار ادا کیا تھا تاہم ان کی با اثر افراد سے ملاقات کے بعد انہوں نے 7 نومبر کو اعلان کرنے کا کہا، تاہم سینیٹ میں حزب اختلاف کے سربراہ ظفر الحق نے جنرل بلوچ کے فیصلے کو اچھی علامت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب پاکستان مسلم لیگ (ن) میں تروتازہ اور ذہین افراد شامل ہوں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب بلوچستان میں نئے چہرے آئیں گے اور خاص طور پر ایسے افراد آئیں گے جو بلوچستان کی آواز کو درست معنوں میں بلند کر سکیں گے۔ یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ (ن) لیگی رہنماء لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ نے پارٹی چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔عبدالقادر بلوچ نے کہا ہے کہ اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے پلیٹ فارم سے افواج پاکستان کے خلاف نازیبا زبان استعمال کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ افواجِ پاکستان کو ادارے کے طور پر نشانہ بنانا قبول نہیں ہے۔ مسلم لیگ (ن) سے علیحدگی کی واحد وجہ فوج کے خلاف بیانیہ ہے۔عبدالقادر بلوچ نے کہا کہ میں خود بھی فوجی رہا ہوں، یہ سب ناقابلِ برداشت ہے۔ مستقبل کی سیاست کا فی الوقت کوئی فیصلہ نہیں کیا۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.