حکومت کا 2 سال کے دوران 45 کھرب روپے کا قرضہ لینے کا اعتراف

حکومت نے 2018 سے 2020 کے دوران شیڈیولڈ بینکوں سے 1.8 ٹریلین اور اسٹیٹ بینک سے 3.6 ٹریلین روپے کے قرضے لئے۔

اسلام آباد ( تیز ترین ) حکومت نے گزشتہ 2 سال کے دوران 45 کھرب روپے کا قرضہ لینے کا اعتراف کر لیا۔ 2018 سے 2020 کے دوران حکومت نے شیڈیولڈ بینکوں سے 1.8 ٹریلین اور اسٹیٹ بینک سے 3.6 ٹریلین روپے کے قرضے لئے۔
تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی حکومت نے قرضوں کے حصول کے معاملے میں ماضی کے تمام ریکارڈز توڑتے ہوئے دو سال میں 5 ارب ڈالرز اور 4.5 ٹریلین روپے کے قرضے حاصل کر لیے۔ وزارت خزانہ نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ 2018 سے 2020 کے دوران حکومت نے قومی مالیاتی اداروں سے 4.5 ٹریلین روپے کے اندرونی قرضہ جات حاصل کیے ہیں۔ جن میں شیڈیولڈ بینکوں سے 1.8 ٹریلین اور اسٹیٹ بینک سے لئے گئے 3.6 ٹریلین روپے کے قرضے شامل ہیں۔ وزارت خزانہ نے بتایا ہے کہ گزشتہ دو سالوں کے دوران حکومت نے اس کے علاوہ بین الاقومی مالیاتی اداروں سے 5 ارب ڈالرز کا قرضہ بھی لیا جب کہ 16.4 ارب ڈالرز کے بیرونی قرضے جب کہ 19.9 ٹریلین روپے کے اندرونی قرضے واپس کیے گئے۔ رپورٹ کے مطابق ہماری ایکسپورٹس بڑھنا شروع ہوچکی ہیں۔ جنوری 2019 میں ایکسپورٹس میں 14 فیصد تک اضافہ ہواہے۔  کرونا وباء کے دوران ایکسپورٹس میں کچھ کمی آئی، سال 2018، 20 میں ہماری مجموعی ایکسپورٹس میں اضافہ ہوا ہے۔ دوسری جانب میڈیا رپورٹس کے مطابق وفاقی حکومت کو مالی مشکلات کے باعث بجٹ سپورٹ کے لئے مزید رقم کی ضرورت ہے

Facebook Comments

POST A COMMENT.