بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی اربوں روپے کی رقوم برآمد کی جائیں گیں۔ چئیرمین نیب

بڑی مچھلیوں کے خلاف میگا کرپشن مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال

اسلام آباد ( تیز ترین ) چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ بڑی مچھلیوں کے خلاف میگا کرپشن مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی اربوں روپے کی رقوم برآمد کی جائیں گیں۔ جس کے لیے تمام تحقیقات کو میرٹ، شفافیت، ٹھوس شواہد اور دستاویزی ثبوتوں کی بنیاد پر مکمل کیا جائے گا۔
چیئرمین نیب نے کہا ہے کہ گیلپ سروے کی رپورٹ کے مطابق 59 فیصد لوگوں نے نیب پر اعتماد ظاہر کیا ہے جب کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل پاکستان، عالمی اقتصادی فورم، پلڈاٹ اور مشال نے بھی بدعنوانی کے خاتمے کے لئے نیب کی کاوشوں کو سراہا ہے۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال نے متعلقہ ڈی جیز کو میگا کرپشن کے ساتھ ساتھ غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے کیسز کی تازہ ترین رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی۔
علاوہ ازیں قومی احتساب بیورونے جعلی اکاؤنٹس اسکینڈل میں پلی بارگین سے 21 ارب روپے مالیت کی ریکوری کرلی۔ تفصیلات کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کیس میں سرکاری زمینوں کی خرد برد میں اہم پیشرفت اس وقت سامنے آئی جب بلڈراحسان الہٰی نے اعتراف جرم کرلیا، جس کے بعد اسٹیل مل اورسندھ حکومت کی زمینیں وگزار کرالی گئی۔ نیب کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ مذکورہ بلڈر نے سرکاری زمین پر سوسائٹی کا منصوبہ بنایا جس کے لیے اس نے ڈی جی ایس بی سی اے منظور قادرکو 35 ملین کی رشوت دے کر سوسائٹی کے منصوبے کی منظوری لی۔ منصوبے کے لیے مجموعی طور پر 562 ایکڑ سرکاری زمین کا غبن ہوا جہاں صرف 29 ایکڑ نجی زمین کے بدلے ملزمان نے 562 ایکڑسرکاری زمین ملیربن قاسم میں الاٹ کرائی، جس میں 362 ایکڑ پاکستان اسٹیل کی تھی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.